اسلام آباد : طلال چوہدری کی توہین عدالت سے متعلق معاملے کی سماعت کیلئے جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ قائم کردیا گیا۔

چیف جسٹس پاکستان چیف جسٹس ثاقب نثار نے طلال چوہدری کی جانب سے عدلیہ اور ججز کیخلاف توہین آمیز زبان استعمال کرنے پر از خود نوٹس لیتے ہوئے ن لیگی رہنماء اور وزیر مملکت برائے داخلہ کو طلب کیا تھا۔

چیف جسٹس نے 6 فروری کو کیس کی سماعت کیلئے جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں سپریم کورٹ کا 3 رکنی بینچ تشکیل دے دیا، جسٹس مقبول باقر اور فیصل عرب بھی بینچ کا حصہ ہوں گے۔

واضح رہے کہ مسلم لیگ ن نے جڑانوالہ میں جلسہ کیا، جس میں نواز شریف سمیت دیگر رہنماؤں نے خطاب کیا تھا، وزیر مملکت برائے داخلہ طلال چوہدری نے عدلیہ کیخلاف جارحانہ انداز اختیار کیا اور ججز پر شدید تنقید کی، توہین آمیز زبان استعمال کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عدالت میں پی سی او ججز بیٹھے ہوئے ہیں۔