Gunahon K Marz Se Chutkara

گناہوں کے مرض سے چھٹکارا

97

شبلی رحمتہ اللہ علیہ نے ایک حکیم سے کہا: مجھے گناہوں کا مرض ہے، اگر اس کی دوا بھی آپ کے پاس ہوتو عنایت کیجئے۔ سامنے تنکے چننے والا شخص یوں گویاہوا: ’’شبلی یہاں آؤ میں اس کی دوا بتاتا ہوں:’’حیا کے پھول،صبر و شکر کے پھل،عجز ونیاز کی جڑ، غم کی کونپل، سچائی کے درخت کے پتے،ادب کی چھال، حسن اخلاق کے بیج، یہ سب لے کر ریاضت کے ہاون دستہ میں کوٹنا شروع کرو

۔اور اشک پشیمانی کا عرق ان میں روز ملاتے رہو، ان سب کو دل کی دیگچی میں بھر کر شوق کے چولہے پر پکاؤ،جب پک کر تیار ہوجائے تو صفا کے قلب کی صافی میں چھان لینا، اور شیریں زبان کی شکر ملا کر محبت کی تیز آنچ دینا، جس وقت تیار ہوکر اترے تو اس کو خوف خدا کی ہوا سے ٹھنڈا کر کے استعمال کرنا‘‘۔ شبلی رحمتہ اللہ علیہ نے نگاہ اٹھا کر دیکھا تو وہ دیوانہ غائب ہو چکا تھا.۔