گڑھی کپورہ سے متحدہ عرب امارت میں مُقیم شخص سبز علی خان 42 سال بعد وطن واپس پہنچ گئے


guinness world record
مردان:گڑھی کپورہ کےعلاقےگڑھی اسماعیل زئی محلہ مذہب یان سے تعلق رکھنے والے سبز علی خان جو متحدہ عرب امارات میں 42 سال سے پردیس میں مقیم رہے اتنی طویل عرصہ کے مسافری کے بعد وطن واپس پہنچنے پر انکا پُروقار استقبال کیا گیا۔ ان کےگھرانے کا ہر فرد اور تمام رشتہ دار کو اطلاع ملتے ہی ان سے ملاقات کیلئے جوق درجوق آرہے ہیں۔
سبز علی خان کی آمد کے بعد ان کا لوگوں سے ملاقات کے دوران کسی کو پہچان نہیں سکا۔ انہوں نے اپنے گھرانے کے ضعیف العمر چند افراد کو پہچان لیے۔
متحدہ عرب امارت سے 42 سال طویل پردیسی کے بعد اپنے آبائی گاؤں گڑھی کپورہ پہنچنے پر دل کی اتھاہ گہرائیوں سے سب نے سبز علی خان کا کا کو خوش آمدید کہا

وہ 1977 میں امارات گیے تہے زندگی کا زیادہ عرصہ امارت کے ستٹیٹ فجیرہ میں رہے اطلاعات کے مطابق گھر والوں سے ناراضگی کے بنا پر غیرت کی وجہ سے وہ اپنے ملک اور اہل خانہ سے دور پردیس کی زندگی گزارتے رہے

نوجوانی میں منگنی کرکے مزدوری کرنے عرب ملک جاکر ایسے بس گیے کہ انتظار کر کرکے منگنی بھی ٹوٹ گیی – اپنے گاؤں والے تو پہچان نہیں رہے لکن وہ بھی کم ہی لوگوں کو پہچان سکے

اتنے طویل برسوں میں متحدہ امارات نے نا تو انھیں شہریت دی اور نہ عزت – بلکہ مشکل سے ہی کچھ درہم بچا کر لوٹ گیے

انکا کہنا تھا اگر یہ وقت کسی یورپی ملک میں گزارتا تو نہ صرف شہریت پاسپورٹ ملتی بلکہ گھر اور دیگر طبی سہولیات بھی مل جاتی