گستاخانہ فلم بنانے والے ہدایت کارارنوڈ فانڈور کے اسلام قبول کرنے کے بعد اہم انکشافات۔ہدایت کارارنوڈ فانڈور کا کہنا تھا کہ امریکہ اور اسرائیلی لابی نے گستاخانہ فلم کی تیاری پر اکسایا تھا، آج میں اپنے کئے پر بہت شرمندہ ہوں۔ کویتی اخبار الرائے کو دیے گئے انٹرویو میں ارنوڈ فانڈورنے کہا اس نے گستا خانہ فلم بنانے کے بعد اپنے جرم سے توبہ کی اور اسلام قبول کرلیا۔گستاخانہ فلم کے پروڈیوسر نے کہا

جب میں نے وہ فلم تیار کی تو اس وقت میں اسلام کے بارے میں یہ سمجھتا تھا کہ اسلام سے یورپ کو خطرہ ہے اور اسلام کی وجہ سے یورپ پر منفی اثرات مرتب ہورہے ہیں۔مگر یہ کوئی عذر نہیں تھا بلکہ یہ ہماری جاہلیت کا نتیجہ تھا کہ ہم اسلام کی حقانیت سے واقف نہیں تھے۔ ہم فلم کے ذریعے عوام الناس کو اسلام کے خطرات سے آگاہ کرنا چاہتے تھے مگر آج میں اس فلم کے بنائے جانے پر سخت شرمندہ ہوں اور معافی کا طلبگار ہوں۔


Dutch Film Maker Arnold Fandor Converted to Islam

This is one of the biggest breaking news we have seen that the man who made movie against Prophet Muhammad PBUH converted to Islam. The name of the dutch film maker is Arnold Fandor and he said I will make a film on the life of Prophet Muhammad PBUH. Well We must say shame on