اسلام آباد : جمیعت علمائے اسلام ف کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ ووٹ کی پرچی جس کے پاس ہو اسے حکومت کرنے کا حق ہے، نوازشریف کو تاحیات نااہلی کی سزا دینا سمجھ سے بالاتر ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے اسلام آباد میں سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا، مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ہمارا دین کوئی کتنا بھی بڑا گناہ کرلے اسےتوبہ کا موقع دیتا ہے جبکہ ہمارے قانون میں غلطی پر معافی مانگ بھی لے تو معاف نہیں کیا جاتا۔

ان کا کہنا تھا کہ ووٹ کی پرچی جس کے پاس ہے اسے حکومت کرنے کا حق ہے، تلوار، توپ نے فیصلہ نہیں کرنا بلکہ ووٹ نے حکومت کا فیصلہ کرنا ہے، ووٹ کی عزت پر کوئی اختلاف نہیں ہے۔

ہم بادشاہتوں اورآمریتوں سے جمہوریت کی طرف آئے ہیں، اب ہمیں جمہوریت کو برقرار رکھنا ہے، نواز شریف کو تاحیات نااہل کیا گیا،اسلام میں تاحیات سزانہیں، کوئی کتنا ہی بڑا گناہ کرلے اصلاح کی گنجائش اسلام نے دی ہے، نوازشریف کی تاحیات سزا سمجھ سے بالاتر ہے۔

سربراہ جے یو آئی نے کہا کہ پاناما کیا چیز ہے؟ یہ دنیا کے کسی بھی ملک میں بحران کا باعث نہیں بنا لیکن ہمارے ملک میں پاناما کی وجہ سے بحران کیوں ہے؟ کیا کسی ایجنڈے کے تحت ملک کو کمزور کرنے کی کوشش تو نہیں ہورہی؟ آج کی دنیا میں دیکھنا ہوگا کہ عالمی ایجنڈہ کیا ہے، ہمیں امریکی تصور سے غافل نہیں رہنا چاہئے۔