نیوزی لینڈ، حملہ آور کو روکنے والا پاکستانی بیٹے سمیت شہید

نیوزی لینڈ کی مساجد پر حملہ کرنیوالے دہشت گرد کو روکنے والا پاکستان کا قابل فخر شہری نعیم راشد بھی حملے میں شہید ہوگیا۔

ذرائع کے مطابق شہید نعیم راشد کا تعلق ایبٹ آباد سے تھا اور اس کا بیٹا طلحہ نعیم بھی حملے میں شہید ہوا ہے۔

نیوزی لینڈ میں ہوئے اس دہشت گرد حملے میں زخمیوں میں سے ایک کا تعلق کراچی سے جبکہ دوسرے کا حافظ آباد سے بتایا جاتا ہے۔

حافظ آباد سے تعلق رکھنے والے محمد امین اپنے بیٹے کے ہمراہ جمعے کی نماز ادا کرنے گئے تھے، انہیں دو گولیاں لگی ہیں، امین ڈیڑھ ماہ قبل اپنے بیٹے اور پوتوں سے ملنے نیوزی لینڈ آئے تھے۔

دوسری جانب کرائسٹ چرچ کی النور مسجد میں فائرنگ سے زخمی ہونے والے 27 سالہ اریب کا تعلق کراچی کے علاقے فیڈرل بی ایریا سے ہے وہ چارٹرڈ اکاؤنٹنٹ فرم کی جانب سے نیوزی لینڈ بھیجا گیا تھا۔

واضح رہے کہ نیوزی لینڈ کی دو مساجد پر نماز جمعہ کے دوران دہشت گرد حملے میں 49افراد جاں بحق اور 48 افراد زخمی ہوئے ہیں ، جاں بحق افراد میں سے زیادہ تر کا تعلق مشرق وسطی اور جنوبی ایشیا سے بتایا جاتا ہے۔

غیر ملکی خبرایجنسی کے مطابق مرنے والوں میں 3 کا تعلق بنگلہ دیش اور 2 کا اردن سے ہے ،جبکہ 9 بھارتی شہری ، 5 پاکستانی ،3 ترک اور 2 افغان شہری لا پتہ ہیں ۔

حملے کے زخمیوں میں انڈو نیشیا کے 2 شہری بھی شامل ہیں ۔

jang news