سکھر بورڈ میٹرک کی طرح فرسٹ ایئر اور انٹر کے امتحانات میں بھی نقل کی روک تھام میں ناکام ہو گئی۔ تمام انتظامات دھرے کے دھرے رہ گئے۔

سکھر بورڈ نویں اور دسویں جماعت کے سالانہ امتحانات کی طرح گیارہویں اور بارہویں جماعت کے سالانہ امتحانات میں بھی نقل کی روک تھام کرنے میں کامیاب نہیں ہوسکا۔ آج سے سکھر، خیرپور، نوشہر و فیروز اور گھوٹکی اضلاع میں قائم کیے گئے 110 امتحانی مراکز میں گیارہویں جماعت کا انگریزی کا پرچہ ہوا جس میں بورڈ کی جانب سے نقل کی روک تھام کے لیے کیے گئے انتظامات دھرے کے دھرے نظر آئے۔

امتحانی مراکز میں کھلے عام نقل ہوتی رہی اور امیدوار دھڑلے سے بلا خوف وخطر گائیڈوں، سالڈ پیپرز اور پھروں کا آزادانہ استعمال کرتے رہے انہیں نہ کوئی روکنے والا نظر آیا اور نہ ٹوکنے والا جبکہ جن کو انہیں نقل سے روکنا تھا وہ خاموش تماشائی بنے رہے۔ کئی امتحانی مراکز میں تو وقت سے قبل پرچہ آؤٹ ہوگیا اور وقت سے قبل ہی جوابات امیدواروں کو مراکز میں ملتے رہے۔