جے یو آئی (س) کے سربراہ مولانا سمیع الحق کے قتل میں اہم پیش رفت ہوئی ہے ،مولانا سمیع الحق کا ڈرائیور پولی گرفک ٹیسٹ میں کئے گئے سوالات کے درست جواب نہ دے سکا اورمسلسل جھوٹ بولتارہا ۔

جیونیوز کے مطابق تفتیشی ٹیم نے مولانا سمیع الحق کے کمرے سے شواہد اکٹھے کئے تو اس میں نو افراد کے ڈی این اے بھی شامل تھے ، یہ ڈی این اے تین افراد کے ڈی این سے میچ کرگئے ۔ اس حوالے سے جب پولی گرافک ٹیسٹ کیا گیاتو تین افراد نے پولی گرافک ٹیسٹ میں سچ بولا اور ان پر کوئی الزام نہ ثابت نے ہوسکا جبکہ مولانا سمیع الحق کے ڈرائیور احمد شاہ سے دو سوال کئے گئے ،نمبر ایک کہ کیا وہ قتل کرنیوالوں جانتا ہے اور دوسراسوال یہ تھاکہ کیا وہ قتل کی منصوبہ بندی میں شامل رہا ہے؟ فارنزک سائنس ایجنسی کے ذرائع کے مطابق مو لانا سمیع الحق کاڈرائیور دونوں سوالات کے جواب میں جھوٹ بولتا رہا ۔

Daily Pakistan