مصرمیں شادی بیاہ روز کی بات ہے اور بعض شادیاں اپنے انوکھے پہلوئوں کی وجہ سے کافی شہرت بھی حاصل کرتی ہیں۔ شادیوں کی گہما گہمی میں مصر میں ایک ایسی شادی بھی انجام پائی ہے جس میں رسم نکاح اشاروں میں منعقد کی گئی۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ نے اس پورے واقعے کی تفصیلات اور اشاروں میں ہونے والی رسم نکاح کی فوٹیج بھی نشرکی ہے۔
رپورٹ کے مطابق یہ منفرد رسم نکاح شمالی مصر کی دمیاط گورنری میں منعقد ہوئی جس میں دلہن باسمین محمد عبدالرزاق اور دلہا احمد الشھاوی رشتہ ازدواج میں منسلک ہوئے۔

باسمین نے العربیہ ڈاٹ نیٹ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ اس کے والد پیشے کے اعتبارسے دکاندار ہیں اور فرنیچرکا کروبارکرتے ہیں۔ مگر وہ گونگے اور بہرے ہیں۔

باسمین کا کہنا ہے کہ اس کا رشتہ طے ہونے کےبعد اس کے والد خود ہی میری شادی کے وکیل بننے کے خواہاں تھے۔ پہلے ہم اس کے لیے تیار نہیں تھےمگر آخر کار ہم نے فیصلہ کیا کہ نکاح کی رسم اشاروں میں انجام دی جائے گی۔

باسمین کا کہنا ہے کہ وہ خود بھی اشاروں کی زبان جانتی ہیں۔ اس نے اپنے والد کے اشاروں کا خود ہی اشاروں میں ترجمانی کا فیصلہ کیا اور اس کے بارے میں اپنے نکاح خواں کو بھی بتا دیا۔ نکاح خواں کی طرف سے منظوری کے بعد ہم نے نکاح کی تقریب منعقد کی۔ ایک سوال کے جواب میں باسمین کا کہنا تھا کہ اشاروں میں رسم نکاح کے ذریعے شادی پروہ بے حد خوش ہے۔ وہ اپنی ایک ہمشیرہ اور بھائی کی شادی بھی اس طریقے سے منعقد کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں۔

العربیہ