مردان ٹریفک پولیس کے جوان نے بہادری کی مثال قائم کرکے جام شہادت نوش کیا ۔
تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز علاقہ تھانہ پار ہوتی سکندرے میں ملزمان امتیاز ،افتخار پسران سراج ساکنان فارم کورونہ پارہوتی نے مقتول مدثر ولد رحمان اللہ ساکن اینزرگئی کاٹلنگ پر فائرنگ کی جن کی فائرنگ سے مدثر موقع پر جاں بحق جبکہ ایک راہگیر عورت مسماۃ (م) زوجہ عبدالرحیم سکنہ سکندرے زخمی ہوگئی۔ ملزمان راہ فرار اختیار کرتے ہوئے بھاگنے کی کوشش کررہے تھے کہ اس دوران مردان ٹریفک پولیس کے دو جوانان(TO ) عطا اللہ اور ٹریفک کانسٹیبل محمد اسحاق نے ملزمان کا تعاقب کیا۔ ملزمان نے ٹریفک پولیس جوانوں پر اندھا دھند فائرنگ شروع کی جس سے ٹریفک پولیس کاایک جوان (TO )عطاء اللہ زخمی اور بعد میں شہید ہوگیا ۔ جبکہ ملزمان میں ایک ملزم امتیاز ولد سراج زخمی حالت میں گرفتار کیا گیا ۔ شہید ہونے والے پولیس جوان (TO )عطاء اللہ کی نماز جنازہ پولیس لائن مردان اور بعد میں شہید کے آبائی گاوں گڑھی کپورہ میں ادا کرکے سپرد خاک کیا گیا ،جس میں ڈی آئی جی مردان محمد علی خان،ڈی پی اومردان سجاد خان، ایس پی آپریشن مشتاق احمد ،ضلعی انتظامیہ اور مردان پولیس افسران و اہلکاران نے کثیر تعداد میں شرکت کی ۔شہید کی میت پر پھول چڑھائے گئے اورسلامی پیش کی گئی اس موقع پر ڈی آئی جی مردان نے ٹریفک پولیس جوانوں کی بہادری کو سراہتے ہوئے خراج تحسین پیش کیا اورکہا کہ عوام الناس کی جان و مال کی حفاظت پولیس کی اولین ترجیحات میں شامل ہیں قیام امن اور جرائم پیشہ افراد کے خلاف لڑنے میں پولیس کسی بھی قسم کی قربانی سے دریغ نہیں کرینگے۔