ملائیشیا کے وزیراعظم مہاتیر محمد نے جنرل قاسم سلیمانی کی موت کو غیر قانونی  قرار دیتے ہوئے اس کا موازنہ سعودی صحافی جمال خشوگی کے قتل سے کیا ہے۔انہوں نے کہا مسلمانوں کو ہر قسم کے خطرات سے بچنے کے لیے متحد ہونا چاہیے۔ یہ مسلم امہ کے لیے بہتر ین وقت ہے کہ وہ ایک ہوجائیں، اب کوئی بھی محفوظ نہیں ہے،اگر کوئی شخص ایک ایسی بات کرتا ہے جو کسی دوسرے کو پسند نہیں ہے تو دوسرے ملک میں بیٹھا شخص ڈرون بھیجتا ہے اور اسے قتل کردیا جاتا ہے۔

مہاتیر محمد کا مزید کہنا تھا کہ مجھے اس بات کی پرواہ  نہیں ہے کہ کون مضبوط ہے اور کون کمزور ہے، اگر معاملات ٹھیک نہیں ہیں تو مجھے لگتا ہے کہ مجھے آواز اٹھانے کا حق ہے۔  امریکی کارروائی نہ صرف ملک کے قوانین کے خلاف تھی بلکہ دنیا کے قوانین کے بھی خلاف ہے، اس سے جنگ کو بڑھاوا ملے گا،

قاس سلیمانی کا قتل ایسے ہی ہے جیسے جمال خشوگی کو قتل کیا گیا، دونوں ہی غیر قانونی کام ہیں۔