ماسکو(24نیوز) روس میں سینئر افغان سیاست دانوں کے ساتھ غیر معمولی مذاکرات میں طالبان نے جنگ زدہ افغانستان کے لیےنئے آئین کا مطالبہ کردیا۔

تفصیلات کے مطابق ماسکو م روس میں جاری افغان امن مذاکرات میں طالبان نے جنگ زدہ افغانستان کے لئے نئے آئین کا مطالبہ کیا ہے، ماسکو میں افغان رہنماؤں سے مذاکرات کے دوران طالبان نے افغانستان کے لیے اسلامی نظام کا وعدہ بھی کیا، افغانستان کے سابق صدر حامد کرزئی، اپوزیشن رہنما اور قبائلی علما مذاکراتی عمل میں شامل ہیں تاہم کابل حکومت کے حکام مذاکرات کا حصہ نہیں۔

طالبان وفد کے ترجمان شیر محمد عباس نے ماسکو میں کہا کہ کابل حکومت کا آئین غیر موزوں ہے جسے مغربی ملک سے حاصل کیا گیا اور امن کی راہ میں رکاوٹ ہے،انہوں نے مزید کہا کہ ہم اسلامی آئین چاہتے ہیں اور نیا منشور اسلامک اسکالرز تشکیل دیں گے۔