وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا ہے کہ افغان طالبان کو مذاکرات کی میز پر لانے پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ پاکستان سے خوش ہیں۔

متحدہ عرب امارات کے ایک اخبار کو انٹرویو دیتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ خوش ہونے کی وجہ سےامریکی صدر نے پاکستان کے لیے پالیسی تبدیل کی ہے۔

فواد چوہدری کا مزیدکہنا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی وزیر اعظم عمران خان سے ملاقات افغان امن مذاکرات کے بعد ممکن ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان نے فی الحال بھارت سے بات چیت کی کوشش مؤخر کر دی ہے، الیکشن کے بعد نئی بھارتی حکومت سے بات چیت کے لیے تیار ہیں۔

وزیر اطلاعات نے کہا کہ پاکستان میں ہر بڑی پالیسی اتفاق رائے سے بنائی جا رہی ہے، پاکستان میں حکومت اور فوج ایک پیج پر ہیں۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ افغانستان میں امن و استحکام کے آنے سے نہ صرف امریکا بلکہ پاکستان کو بھی فائدہ ہو گا۔

جنگ نیوز