طالبان نے دعویٰ کیا ہے کہ افغانستان کے صوبہ غزنی میں گر کر تباہ ہونے والے طیارہ امریکی خفیہ ادارے سی آئی اے کا ہے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے کہا ہے کہ طیارے میں سوار امریکی انٹیلی جنس کے اعلیٰ افسران اور دیگر تمام ارکان مارے گئے ہیں۔ یہ طیارہ ضلع دہ یک کے علاقے سدو خیلو میں گر کر تباہ ہوا۔

طالبان ترجمان نے کہا ہے کہ طیارے کا ملبہ اور امریکی حکام کی لاشیں کریش سائٹ پر پڑی ہوئی ہیں۔ تباہ ہونے والا یہ امریکی طیارہ انٹیلی جنس آپریشن پر تھا۔

دوسری جانب امریکا نے ابھی تک طیارہ حادثے پر کسی قسم کا کوئی تبصرہ نہیں کیا لیکن اطلاعات ہیں کہ امریکی فوج کی جانب سے اس کی تحقیقات شروع کر دی گئی ہے۔

ادھر افغان حکومت نے طیارے کو پیش آنے والے حادثے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا ہے کہ طیارہ مقامی وقت کے مطابق دوپہر ایک بجے کے قریب گرا۔ یہ ایک مسافر بردار طیارہ تھا جو ضلع دہ یک میں گرا۔ ابتدائی طور پر معلوم ہوا ہے کہ اس طیارے میں تکنیکی خرابی پیدا ہو گئی تھی جس کے بعد وہ سیدھا زمین پر گرا اور اس میں آگ لگ گئی۔

یاد رہے کہ ابتدائی طور پر کہا گیا تھا کہ یہ طیارہ افغان ایئر لائن آریانا کا ہے لیکن کمپنی نے ان افواہوں کو مسترد کرتے ہوئے کہا تھا کہ طیارہ ان کا نہیں ہے۔