چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے آئندہ ماہ سے آبادی پر کنٹرول کے لیے مہم شروع کرنے کا اعلان کر دیا، ان کا کہنا ہے کہ دو بچے ہی اچھے مہم کا آغاز اپنے گھر سے کروں گا۔

مانچسٹر سے جیو نیوز پر براہ راست نشر ہونے والے ٹیلی تھون کے دوران خطاب کرتے ہوئے چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار نے کہا کہ انہیں خوف تھا کہ چیف جسٹس کو فنڈ ریزنگ پر نہیں جانا چاہیے، لیکن احساس ہوا کہ یہ خوف غلط تھا،پاکستانیوں کی حب الوطنی اور جذبہ دیکھ کر چندے کی اپیل کا فیصلہ کیا۔

انہوں نے کہا کہ مجھے کچھ بڑوں سے توقع تھی لیکن انہوں نے ڈیم فنڈ میں خاطر خواہ حصہ نہیں ڈالا، افسوس اربوں کمانے والوں نے ڈیم فنڈ میں ایک ارب بھی واپس نہیں دیا، حساب لوں گا کہ کس نے کتنی جائیدادیں بنائیں؟

چیف جسٹس نے مزید کہا کہ لانچ پر پیسے باہر بھیجنے والوں کو بھی حساب دینا پڑے گا، تین ارب روپے کی پراپرٹی دبئی میں کیسے بنائی؟ یہ سارا پیسہ پاکستانی قوم اور ٹیکس دہندگان کی امانت ہے۔

انہوں نے کہا کہ ڈیم کے مخالف چند مفاد پرست ڈیم بننے سے نہیں روک سکتے، دریائے سندھ کا پانی عوام کی امانت ہے، اس میں کوئی خیانت نہیں کرسکتا۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے یہ بھی کہا کہ لندن میں ڈیم مخالف مظاہرے سے پتہ چل گیا کہ آج تک ڈیم کیوں نہ بنے۔

ادھر ڈیم فنڈ کے سلسلے میں جیو نیوز پر نشر ہونے والی مانچسٹر سے براہ راست ٹیلی تھون کے دوران 36 کروڑ روپے سے زائد کے عطیات اور اعلانات کیے گئے۔

مانچسٹر میں جیو انٹرنیشنل کی ٹیلی تھون نے حب الوطنی سے سرشار اوورسیز پاکستانیوں کو یکجا ہونے کا پلیٹ فارم مہیا کیا جس کا نتیجہ ریکارڈ ڈونیشن کے وعدوں کی صورت میں سامنے آیا۔

تقریب میں موجود افراد نے اور ٹیلی فون کالز پر بے شمار افراد نے دل کھول کر عطیات کے اعلانات کیے، چار گھنٹے پر محیط ٹیلی تھون میں مجموعی طور پر 20 لاکھ 98 ہزار پاؤنڈ سے زائد کے عطیات اور اعلانات کیے گئے، جو 36کروڑ پاکستانی روپے سے زائد بنتے ہیں۔

دس کروڑ روپے کے سب سےبڑے ڈونیشن کا اعلان وزیراعظم کے معاون خصوصی انیل مسرت کی طرف سے کیا گیا۔

انیل مسرت نے چیف جسٹس کا شکریہ ادا کیا جو دل کے عارضے کے باوجود نہ صرف ٹیلی تھون میں شریک ہوئے بلکہ اختتام تک تقریب میں موجود رہے۔

اس سے پہلے پاکستانی قونصل جنرل، باکسر عامر خان اور دیگر نمایاں شخصیات نے بھی اظہار خیال کیا اور چیف جسٹس کی کاوشوں پر انہیں خراج تحسین پیش کیا۔

چیف جسٹس نے بھی ڈیم فنڈ کی تعمیر کےلیے آگے آنے والوں کا شکریہ ادا کیا اور یہ یقین دلایا کہ ان کی دی ہوئی رقم ریاست کے پاس امانت ہوگی۔

شرکا ئے تقریب نعیم بخاری کے دلچسپ جملوں اور مقامی گلوکار کے ملی نغے سے بھی محظوظ ہوئے، تقریب کے اختتام پر میزبان حامدمیر اور انیل مسرت نے مل کر پاکستان زندہ باد کا نعرہ لگایا۔

https://jang.com.pk/news/579380-chief-justice-says-two-children-campaign-will-start-from-my-home