صوابی: اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کا کہنا ہے کہ شیخ رشید کی اپنی سیاسی جماعت اور ان کی اپنی مرضی ہے، وہ کچھ بھی کہیں لیکن میں قومی اسمبلی کے معاملات چلانے کے لیے کسی سے ڈکٹیشن نہیں لوں گا۔

اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے صوابی میں ڈسٹرکٹ جیل کا سنگ بنیاد رکھنے کی تقریب میں شرکت کی۔

میڈیا سے گفتگو میں جب ممبر پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے معاملے پر شیخ رشید کے بیان سے متعلق پوچھا گیا تو اسپیکر قومی اسمبلی کا کہنا تھا کہ شیخ رشید کی اپنی مرضی ہے اور ان کی اپنی پارٹی ہے، وہ کچھ بھی کہیں لیکن میں اپنی پارٹی کے اصولوں کے مطابق چلوں گا۔

انہوں نے کہا کہ شیخ رشید کو کیا مسئلہ ہے نہیں جانتا، میں نے جو بھی کام کرنا ہے وہ اسمبلی رولز کے مطابق کرنا ہے اور کسی سے ڈکٹیشن نہیں لوں گا۔

ان کا کہنا ہے کہ ان تمام معاملات پر وزیراعظم عمران خان سے بات کروں گا۔

خیال رہے کہ عوامی مسلم لیگ کے سربراہ اور وزیر ریلوے شیخ رشید اپوزیشن لیڈر شہباز شریف کے چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی بننے کے خلاف ہیں اور وہ بھی کمیٹی میں شامل ہونا چاہتے ہیں۔

شیخ رشید مسلسل میڈیا سے گفتگو میں اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کو تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں اور گزشتہ روز بھی انہوں نے کہا تھا کہ وزیراعظم کی طرف سے میں پبلک اکاونٹس کمیٹی کا رکن ہوں، اسپیکر کا کوئی اختیار نہیں کہ مجھے پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا رکن نہ بنائے، اسپیکر نے مجھے پی اے سی کی رکنیت نہ دے کر غلط کیا، میرا معاملہ عمران خان کے ساتھ سیٹل ہے