PTI Chairman Imran KHan

پشاور – پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ آنے والے انتخابات میں پی ٹی آئی پورے ملک میں کلین سویپ کرے گی۔ کارکن پارٹی کی جان ہیں اور دوہزاراٹھارہ کے لئے ٹکٹ پارٹی کارکنوں کی مشاورت سے دئیے جائیں گئے۔ اراکین اسمبلی کا ضمیر خریدنے کے لئے چار چار کروڑ روپے دیئے گئے۔ تاہم انہوں نے پی ٹی آئی کے ان اراکین کو خوشخبری سنائی جنہوں نے ووٹ نہیں بیچا ان اراکین اسمبلی کو دوبارہ ٹکٹ دیا جائیگا ۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو پشاور میں پارٹی کی رکنیت سازی مہم کے حوالے سے مختلف کیمپوں کے دورے کے موقع پرکیا۔ اس موقع پر وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک، صوبائی وزراء شاہ فرمان، اشتیاق ارمڑ، رکنیت سازی مہم کے ریجنل کوارڈننیٹر مینہ خان آفریدی اور رکن قومی اسمبلی ارباب عامر بھی ان کے ساتھ موجود تھے۔یونیورسٹی ٹاؤن میں واقع لیڈیز کلب میں قائم رکنیت سازی کیمپ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان نے کہاکہ خفیہ بیلٹ سے سینیٹ میں اراکان اسمبلی کو ہارس ٹریڈنگ کا موقع ملتا ہے اور سالوں سے یہی کام ہورہا ہے اور اس دفعہ بھی ہمارے خدشات درست ثابت ہوئے ہیں اس لئے ہمارا مطالبہ ہے کہ سینٹ انتخابات براہ راست کئے جائیں تاکہ کوئی بھی اپنے ضمیر کا سودا نہ کرسکے۔انہوں نے کہاکہ ہمیں کروڑوں روپے دینے والوں کا پتہ ہے اور اپنی پارٹی میں انکوائری کررہے ہیں اور اگر کسی بھی رکن اسمبلی کے خلاف ٹھوس شواہد ملے تو ان کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گئی کیسزدرج کئے جائیں گئے انہوں نے کہاکہ سوشل میڈیا پر جاری ہونے والے اراکین کے خلاف کارروائی نہیں کرسکتے البتہ پارٹی تحقیقات کررہی ہے اوربہت جلد سب کچھ سامنے آجائیگا۔ عمران خان نے کہاکہ ہمارے لوگوں کو چار چار کروڑ روپے کی آفر ہوئی لیکن وہ نہیں بکے اور ایسے اراکین کوخراج تحسین پیش کرتے ہوئے

ابھی سے پارٹی ٹکٹ دینے کا اعلان کرتا ہوں۔ انہوں نے کہاکہ مسلم لیگ ن کو سینٹ چیرمین بننے نہیں دیں گئے تاہم پیپلزپارٹی کے ساتھ بھی چلنا مشکل ہے اچھا ہوگا کہ سینٹ چیرمین بلوچستان سے آجائے ۔ مولانا فضل الرحمٰن اور آصف زرداری کی ملاقات کے حوالے سے انہوں نے کہاکہ جن کا کوئی نظریہ نہ ہو تو وہ کسی بھی پارٹی میں جاسکتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ ن لیگ کی ڈیڑھ سال سے کوشش ہے