سعودی عرب میں گذشتہ 24 گھنٹے میں کرونا وائرس کے 2840 کیس ریکارڈ کیے گئے ہیں۔ مملکت میں یہ ایک دن میں اس مہلک وَبا کے سب سے زیادہ کیس ہیں۔

سعودی وزارت صحت کے ترجمان ڈاکٹر محمد العبد العالی نے ہفتے کے روز نیوز بریفنگ میں بتایا ہے کہ اب مملکت میں کرونا وائرس کے کل کیسوں کی تعداد 51980 ہے۔

سعودی عرب میں کرونا وائرس کے کیسوں میں روزانہ اضافے کے ساتھ ساتھ صحت یاب ہونے والوں کی تعداد بھی مسلسل بڑھ رہی ہے اور مزید 1797 افراد صحت یاب ہوگئے ہیں۔یوں اب تک 23666 افراد تن درست ہوچکے ہیں اور یہ کل مریضوں کا قریباً نصف ہیں۔

ترجمان نے کرونا وائرس سے دس نئی اموات کی بھی اطلاع دی ہے۔مملکت میں اب تک وفات پانے والوں کی تعداد 302 ہوگئی ہے۔ سعودی عرب نے علاج معالجے کی بہتر سہولتوں اور نظم ونسق کی بدولت کرونا وائرس کے کیسوں کے مقابلے میں کم شرح اموات کو برقرار رکھا ہوا ہے اور مملکت میں اب تک اس وبا کا شکار ہونے والے صرف 0۰6 افراد کی اموات ہوئی ہیں جبکہ عالمی سطح پر کرونا سے اموات کی شرح قریباً سات فی صد ہے۔

انھوں نے بتایا کہ مملکت بھر میں 18285 افراد کے کرونا وائرس کے ٹیسٹ کیے گئے ہیں اور ان میں نئے مریضوں کی تصدیق ہوئی ہے۔سعودی عرب میں اب تک وزارت صحت کے عملہ نے 570360 افراد کے کرونا کے ٹیسٹ کیے ہیں۔

سعودی وزارت صحت شہریوں اور مکینوں پر مسلسل سے یہ زور دے رہی ہی ہے کہ وہ صرف ناگزیر ضرورت کی صورت ہی میں گھروں سے باہر نکلیں اور بلا ضرورت باہر جانے سے گریز کریں تاکہ وہ کرونا وائرس کا شکار ہونے سے بچے رہیں۔

سعودی عرب نے کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے اسی ہفتے مزید اقدامات کا اعلان کیا ہے اور عیدالفطر کی تعطیلات کے موقع پر 23 مئی سے 27 مئی تک 24 گھنٹے کا کرفیو اور لاک ڈاؤن نافذ کرنے کا فیصلہ کیا ہے جبکہ رمضان کے اختتام تک شہروں میں نافذ کرفیو میں نرمی جاری رہے گی۔