ریاض: سعودی وزارت تجارت اور سرمایہ کاری نے انتباہ دیا ہے کہ جو سعودی غیرملکی کو اپنے نام سے کاروبار کرائے گا اسے دو برس قید اور 20 لاکھ ریال جرمانہ کی سزا ہوگی۔

عرب میڈیا کے مطابق سعودی وزارت تجارت اور سرمایہ کاری نے خبردار کیا ہے کہ جو سعودی غیرملکی کو اپنے نام سے کاروبار کرائے گا اسے دو برس قید اور 20 لاکھ ریال جرمانہ تک کی سزا ہوگی جبکہ اخبارات میں بھی اس کے خرچ پر تشہیر کی جائے گی۔

رپورٹ کے مطابق سعودیوں کے نام سے دکانیں کرائے پر حاصل کرنے والے غیرملکیوں نے بھی کرائے دینے سے انکار کردیا ہے۔

دکانداروں کا موقف ہے کہ دکان ان کے نام پر نہیں بلکہ سعودیوں کے نام پر ہے لہٰذا کرایہ بھی وہی ادا کرے گا، اس سلسلے میں وہ سعودی بھی مشکل میں آگئے ہیں جن کے زیر کفالت افراد اپنے کفیل کے نام سے کرائے پر لیے ہوئے تھے اور سعودی عرب سے رخصت ہوگئے۔

عرب میڈیا کے مطابق اب دکانوں کے مالکان کرایوں کا مطالبہ انہی سعودیوں سے کررہے ہیں جن کے نام پر دکانیں کرائے پر حاصل کی گئی تھیں۔

واضح رہے کہ سعودی عرب میں غیرملکیوں کے کاروبار کرنے پرسعودی ائزیشن کے تحت پابندیاں عائد کرکے مقامی سعودی شہریوں کے لیے روزگار کے مواقع بڑھائے جارہے ہیں۔

دوسری جانب سعودی عرب میں رہائش پذیر سعودی فیملیز کے لیے سالانہ فیس مقرر کرنے پر بڑی تعداد میں غیرملکی سعودی عرب چھوڑنے پر مجبور ہوگئے ہیں۔

Ary news