سابق وزیر اعظم سمجھتے ہیں کہ جب ان کے امیدوار کی بات ہو تب ہی ووٹ کی عزت ہونی چاہیے۔- عبدالقدوس بزنجو

7

بلوچستان کے وزیر اعلیٰ عبدالقدوس بزنجو نے پاکستان مسلم لیگ (ن) کے تا حیات قائد نواز شریف کی چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی پر تنقید کا حوالہ دیتے ہوئے کہا ہے کہ سابق وزیر اعظم سمجھتے ہیں کہ جب ان کے امیدوار کی بات ہو تب ہی ووٹ کی عزت ہونی چاہیے۔

لاہور میں چوہدری شجاعت حسین کی کتاب کی تقریب رونمائی سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ’نواز شریف ووٹ کی عزت کی بات کرتے ہیں لیکن صرف اس وقت جب ان کے اپنے امیدوار ہوں‘۔

ان کا کہنا تھا کہ نواز شریف نے گزشتہ ماہ جمہوری طریقے سے چیئرمین سینیٹ نامزد ہونے والے صادق سنجرانی کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا اور اگر ان کی جگہ نواز شریف کا امیدوار کامیاب جاتا تو ووٹ کی عزت کی جاتی۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف نے خود یہ لکیر کھینچی ہے جس کے مطابق انہیں یا محمود خان اچکزئی کو دیئے گئے ووٹ کی عزت ہے لیکن اگر یہ ووٹ کسی اور کو دیا جائے تو یہ ووٹ کی تذلیل ہوگی۔

پاکستان مسلم لیگ (ق) سے تعلق رکھنے والے عبد القدوس بزنجو جو پاکستان مسلم لیگ (ن) کے ناراض اراکین صوبائی اسمبلی کی حمایت سے وزیر اعلیٰ بنے تھے کا کہنا تھا کہ لوگ مسلم لیگ (ن) کو چھوڑ کر جارہے ہیں کیونکہ انہیں ان کی قیادت سے کبھی عزت نہیں ملی۔

انہوں نے مسلم لیگ (ن) سے مزید رہنماؤں کے چھوڑ کر جانے کی پیش گوئی کرتے ہوئے بتایا کہ نواز شریف نے کبھی اپنے لوگوں کی عزت نہیں دی لیکن ان لوگوں کو چھوڑ کر جانے کا موقع نہیں مل رہا تھا، ہم نے انہیں موقع فراہم کیا اور وہ اس سے مستفید ہورہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ وہ اور دیگر افراد 2013 میں پاکستان مسلم لیگ (ق) کے ساتھ کھڑے تھے جبکہ ہمیں معلوم تھا کہ ہماری جماعت زیادہ نشستیں حاصل نہیں کر پائے گی اور اس کی وجہ یہ ہے کہ ہمیں اپنی جماعت کی قیادت کی جانب سے عزت ملی ہے۔

خیال رہے کہ حالیہ ہونے والے سینیٹ انتخابات میں بلوچستان سے تعلق رکھنے والے آزاد سینیٹر صادق سنجرانی اور پیپلز پارٹی کے سینیٹر سلیم مانڈوی والا کو پیپلز پارٹی اور پاکستان تحریک انصاف سمیت مختلف سیاسی جماعتوں کی حمایت کے ساتھ بالترتیب چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین منتخب کیا گیا تھا۔

اس انتخاب پر پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائدین بشمول وزیر اعظم شاہد خاقان عباسی اور نواز شریف نے تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

انہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ انتخابات میں ووٹرز کو خریدا گیا ہے اور انہوں نے چیف جسٹس سے بلوچستان میں اس سیاسی تبدیلی پر از خود نوٹس لینے کا بھی مطالبہ کیا تھا۔
https://www.youtube.com/watch?v=yVQ58iU3Rbg