پاکستان میں بطور سیاح آنے اور پھر یہیں کی ہوجانے والی امریکی مصنف اور دستاویزی فلموں کی ہدایتکار سنتھیا رچی کا کہنا ہے کہ خبروں کےمطابق آصف زرداری کی بیٹی اور مبینہ طور پر پولیس آفیسرراؤ انوار کے ہاتھوں پولیس مقابلے میں قتل ہونے والے نقیب اللہ محسود کےدرمیان معاشقہ تھااور دونوں میں ملاقاتیں ہوا کرتیں تھیں۔

یہ خبر/تھیوری ایک عرصہ سوشل میڈیا کی زینت بنی رہی ہے مگر کسی سنجیدہ خبروں کے پلیٹ فارم سے ایسی کوئی رپورٹس سامنے نہیں آئیں۔ سنتھیا رچی کی جانب سے اس خبر کا حوالہ دئیے جانے نے ایک بار پھر اس دبی ہوئی تھیوری کو ہوا دے دی ہے۔

سنتھیا کی جانب سے اس انکشاف پر پیپلز پارٹی کے جیالوں نے سخت ردعمل کااظہار کیا، انکا کہنا تھا کہ ایسا پہلی بار نہیں ہورہا محترمہ بینظیر بھی اسی طرح کے الزامات کا سامنا کرچکی ہیں ہم ان کی بیٹیوں کو اسکا نشانہ نہیں بننے دیں گے، جسکے جواب میں سنتھیا رچی نے لکھا کہ گالی دینے کا شکریہ لیکن میں وہ پہلی شخص نہیں ہوں جس نے یہ بات کی ہے اور نہ ہی آخری ہونگی۔میں بختاور کی شہرت کو نقصان نہیں پہنچانا چاہتی ،ایک لبرل پارٹی کا رکن ہونے کی حیثیت سے وہ جس سے چاہیں معاشقہ کرسکتی ہیں ۔ نہیں ؟؟

اس کے علاوہ سنتھیا رچی نے پی ٹی ایم  کی جانب بھی اپنی توپوں کا رخ موڑا ، ان کا کہنا تھا کہ پی ٹی ایم کی گلالئی اسماعیل مردوں کے لیے لڑکیوں کا بندوبست کیا کرتی تھیں