پارلیمنٹ ہاؤس کے اجلاس کے دوران حریم شاہ اور صندل خٹک کے چرچے مسلم ۔۔ ن لیگی رہنماء مشاہد اللہ نے حکومت کی خاموشی پر بڑا مطالبہ کر دیا

مشاہداللہ کا کہنا تھا کہ یہ حکومت نہیں قماشوں کا ٹولہ ہے ہم بھی حکومت میں آئے تھے ہمارے دور میں تو کسی صندل خٹک یا حریم شاہ کی جرات نہیں ہوئی تھی کہ وہ پارلیمنٹ ہاؤس، چوتھے فلور یا وزارت خارجہ کے دفتر چلی جائے۔۔

مشاہداللہ نے سوال کیا کہ حریم شاہ وزارت خارجہ کے دفتر کیسے چلی گئی وہاں تو میں سینیٹر ہونے کے باوجود نہیں جاسکتا۔ شیخ رشید سے متعلق سوال پر کہا کہ حریم شاہ متع کی بات کررہی ہیں نکاح کی نہیں۔

قومی اسمبلی کے اجلاس میں مشاہداللہ نے کہا کہ ریاست مدینہ میں حریم شاہ اور صندل خٹک نہیں ہوتیں۔ یہ ریاست مدینہ کو بدنام کررہے ہیں یہ تو ریاست کوفہ سے بھی بدتر ہیں