رانا ثنا اللہ کو چار مرلے کا مکان وراثت میں ملا، آج 25 سے 30 ارب کے اثاثے ہیں۔۔ ڈی جی اے این ایف میجر جنرل محمد عارف ملک

گزشتہ روز کابینہ کو رانا ثنااللہ کیس میں بریفنگ دیتے ہوئے ڈی جی اے این ایف نے کابینہ کو بتایا کہ ہمارے پاس رانا ثنا اللہ کے خلاف ٹھوس ثبوت موجود ہیں۔۔ ڈی جی اے این ایف نے انکشاف کیا کہ رانا ثنا اللہ کو چار مرلے کا مکان وراثت میں ملا لیکن اب ان کے اثاثوں کی مالیت 25 سے 30 ارب روپے ہے۔

وفاقی وزراء کا کہنا تھا کہ کارروائی اور کیس کی مس ہینڈلنگ کے باعث اپوزیشن کو تنقید کا موقع ملا۔ مافیا نے اے این ایف کی طریقہ کارروائی کو شکست دے دی۔ ڈی جی اے این ایف کا کابینہ اراکین کے سوالوں کا جواب دیتے ہوئے کہنا تھا کہ ہماری کوئی سیاسی وابستگی نہیں، شواہد کی بنیاد پر کارروائی کرتے ہیں۔

اینٹی نارکوٹکس فورس کے ڈی جی میجر جنرل محمد عارف ملک کا کہنا تھا کہ ہمارے پاس رانا ثنا اللہ کے خلاف ناقابل تردید شواہد موجود ہیں، ان کے خلاف مضبوط کیس تیار ہے، کیس کا ٹرائل ہوگا تو حقائق قوم کے سامنے آ جائیں گے۔ اے این ایف آزاد ادارہ ہے، قانون کے مطابق کام جاری رکھے گا۔