حافظ حمداللہ نے اپنی ویڈیو کے حوالے سے زرتاج گل کو بہن قرار دیتے ہوئے معافی مانگ لی، ایک نجی ٹی وی چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے سینیٹر حافظ حمداللہ کا کہنا ہے کہ وزیرمملکت میری بہن ہیں اور میری بھی بہنیں اور بیٹیاں ہیں۔ انھوں نے کہا کہ جو خاتون جہاں بھی موجود ہو وہ میری بہن ہے۔ میں اپنے بیان پر ان سے معافی چاہتا ہوں۔ انھوں نے کہا کہ اگر میری وضاحت سے زرتاج گل کو تسلی نہیں ہوئی تو میں ان سے معذرت خواہ ہوں۔

اسی ٹی وی شو میں موجود وزیرمملکت برائے موسمی تبدیلی زرتاج گل حافظ حمد اللہ کے بات کرنے سے پہلے ہی اٹھ کرچلی گئیں۔ یاد رہے کہاردو سیاست کی رپورٹ کے مطابق حافظ حمد اللہ سے ایک پشتو انٹرویو کے دوران سوال کیا گیاتھا کہ زرتاج گل کہتی ہیں کہ عمران خان کو دیکھوں تو حالات ٹھیک لگتے ہیں؟ اس پر حافظ حمد اللہ نے جواب دیاتھا کہ زرتاج گل سے پوچھو کہ مجھے دیکھ کر ان کو کیسا لگتا ہے؟کیونکہ میں عمران خان سے زیادہ خوبصورت اور جوان ہوں،میری مسکراہٹ بھی اچھی ہے اور بول چال بھی۔

حافظ حمد اللہ کے اس بیان پر پاس موجود لوگ بھی کھل کھلا کر ہنسنے لگےتھے۔حافظ حمد اللہ کے بیان پر سوشل میڈیا صارفین نے سخت ناراضی کا اظہار کیا ہے،صارفین کا کہنا تھا کہ ہر انسان پر عورت کی عزت کرنا لازم ہے۔خاص طور پر ایک سیاسی شخصیت کا خاتون کے حوالے سے اس طرح کا بیان شرمناک ہے۔صارفین جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمن سے حافظ حمد اللہ کے بیان کا نوٹس لینے کی بھی اپیل کی تھی۔

واضح رہے کہ وفاقی وزیرزرتاج گل نے عمران خان کی مسکراہٹ کی تعریف کی تھی ان کہنا تھا کہ عمران خان کی قاتلانہ مسکراہٹ ہے اور وہ جب بھی آتے ہیں ،ہم سب کی تمام پریشانیاں ختم ہو جاتی ہیں۔

ایک یوٹیوب چینل کو انٹرویو دیتے ہوئے زرتاج گل کا کہنا تھا کہ عمران خان وہ واحد انسان ہیں جس کی شخصیت میں ایک جادو ہے جو کہ کسی اور کے پاس نہیں ہے۔مزید بات کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عمران خان کی مسکراہٹ قاتلانہ ہے جس کو دیکھ کر ہم سب کی پریشانیاں ختم ہو جاتی ہیں۔۔وفاقی وزیر نے عمران خان کی شخصیت اور چلنے کے حوالے سے سوا ل کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ ہمارے وزیراعظم کی پوری دنیا فین ہے۔لوگ ان کے چلنے کی ویڈیوز بنا کر سوشل میڈیا پر اپلوڈ کرتے ہیں کیونکہ ا ن کی شخصیت ہی اس قدر قابل تعریف ہے کہ ہم لوگ بھی اپنی پریشانیاں بھول جاتے ہیں۔ اب حافظ حمد اللہ نے اپنے بیان پر زرتاج گل سے معافی مانگ لی ہے۔