ضمانت پر رہا ہونے کے  بعد نجی چینل سے بات کرتے ہوئے  رانا ثنا اللہ نے کہا کہ گرفتاری والے دن وہ ایک میٹنگ میں شرکت کے لئے لاہور  جا رہے تھے جیسے ہی لاہور ٹول پلازہ کراس کیا  قریب 100 ANF اہلکار آگے کھڑے تھے انہوں نے گاڑی روکی۔ میرے گن مین نے انہیں بتایا، مگر ANF والوں نے  فوری ڈرائیونگ سیٹ سنبھالی اور مجھے ANF کے تھانے لے گئے ۔ پورا راستہ اور ساری رات  مجھ سے کسی نے کوئی بات نہ کی، اور نا ہی کوئی پوچھ گھ ہوئی

مجھے اگلے روز شہریار آفریدی کی پریس کانفرنس سے پتہ لگا کہ میں نے خود منشیات کا بیگ انکے حوالے کیا ہے ۔ انکا کہنا تھا کہ میری ایک منٹ کے لئے بھی تفتیشی افسر میجر عزیز  سے بات نہیں ہوئی ۔حکومت اگر سچی ہے کوئی ویڈیو وغیرہ ہی پیش کر دے

رانا ثناء اللّه کا کہنا تھا ٹھوکر نیاز بیگ لگے ہوئے سیف سٹی کیمرے میری بے کا گناہی کا ثبوت دیتے ہیں ۔ آپ انکی ریکارڈنگ دیکھیں اور انکے بیانات دیکھیں سب سمجھ آ  جائے گا