جاپان نے 3 لاکھ 40 ہزار پاکستانیوں کیلئے ملازمتوں کا اعلان کر دیا، چیئرمین پوئپا سرفراز ظہور چیمہ کا کہنا ہے کہ ہنرمند اور نیم ہنرمند پاکستانیوں کی جاپان کیلئے بھرتی کا جلد آغاز ہوگا۔

Posted by Dunya News on Friday, January 24, 2020

تفصیلات کے مطابق کراچی میں تعینات قونصل جنرل جاپان توشی کازو ایسومورا نے پاکستان عوام کو خوشخبری سنا دی اور بتایا روزگار کی فراہمی کیلئے پاکستان اور جاپان کے درمیان ایمریگیشن معاہدہ ہوگیا ہے۔

 توشی کازو ایسومورا کا کہنا تھا کہ معاہدہ ہوچکا ہے تاہم اچانک سے یہ شروع نہیں ہوگی ، دیکھنا ہوگا کہ درست اورباصلاحیت امیدوار کون ہے تاہم امیگریشن کیلئے جاپانی زبان لازمی سیکھنا ہوگی۔ قونصل جنرل جاپان نے مزید کہا کہ چودہ شعبہ جات میں اسکلڈ ورکز کو نوکری کے مواقع دیے جائیں گے اور پاکستان میں ٹیکنالوجی کی منتقلی بھی یقینی بنائی جائے گی۔

یاد رہے دسمبر 2019 میں جاپان اور پاکستان کے درمیان تربیت یافتہ افرادی قوت کو جاپان میں روزگار فراہم کرنے کا معاہدہ ہوا تھا۔ جاپان کے سفیر مقصودہ نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا تھا کہ  آج کا دن دونوں ممالک کے عوام کے لیے خاص ہے.

اس معاہدے سے دونوں ممالک میں تعلقات مضبوط ہوں گے، جاپان میں روزگار کے لیے فنی مہارت کے ساتھ جاپانی زبان جاننا بھی ضروری ہے، جاپان کو 3 لاکھ 40 ہزار کے قریب تربیت یافتہ افرادی قوت کی ضرورت ہے۔

معاون خصوصی زلفی بخاری کا کہناتھا کہ  پاکستان کی 65 فی صد آبادی 35 سال سے کم عمر ہے، پاکستان کی ہنر مند افرادی قوت کو جاپان میں روزگار فراہم ہونے سے پاکستان میں ترقی ہوگی، پاکستانیوں کو جاپان میں 14 مختلف شعبوں میں روزگار کے مواقع ملیں گے، اس سلسلے میں انفارمیشن ٹیکنالوجی پر نوجوان زیادہ توجہ دیں۔