کلکتہ: بھارتی ریاست مغربی بنگال کی رہائشی ریتا سرکار نامی خاتون نے الزام عائد کیا ہے کہ اس کے شوہر نے جہیز نہ دینے کی پاداش میں میرا گردہ نکلوا دیا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق بھارتی ریاست مشرقی بنگال کی رہائشی ریتا سرکار نے الزام عائد کیا ہے کہ اس کے شوہر نے اپنے بھائی کے ساتھ مل کر جہیز نہ دینے کے جرم میں میرا گردہ بیچ دیا ہے۔
بھارتی اخبار ہندوستان ٹائمز سے بات کرتے ہوئے ریتا سرکار کا کہنا تھا کہ شوہر ہمیشہ جہیز کا مطالبہ کرتا تھا اور مجھے کئی سالوں تک جہیز نہ دینے کی وجہ سے تشدد کا نشانہ بنایا جاتا رہا،
اس دوران میں نے اپنے شوہر کو معدے کی تکلیف کے بارے میں بتایا جس پر مجھے میرا شوہر کلکتہ کے ایک نجی اسپتال لے گئے اور مجھے کہا گیا کہ تمھارا اپینڈکس کا آپریشن ہے جس کے بعد تم ٹھیک ہوجاؤ گی، تاہم مجھے خبردار بھی کیا گیا کہ اس آپریشن کے حوالے سے کسی سے ذکر نہ کیا جائے۔

ریتا سرکار نے بتایا کہ گزشتہ برس میری طبیعت خراب ہوئی تو ایک ڈاکٹر کے پاس گئی جہاں انکشاف ہوا کہ میرا دایاں گردہ غائب ہے، دوسرے طبی معائنے میں بھی گردہ نہ ہونے کی تصدیق ہوچکی ہے، مجھے سمجھ آگئی کہ جہیز کے مطالبات پورے نہ ہونے پر میرے شوہر نے میرا گردہ فروخت کردیا تھا اور آپریشن کے حوالے سے خاموش رہنے کا کیوں کہا گیا تھا۔

پولیس انسپکٹر ادے شنکر گھوش کے مطابق اعضا کی منتقلی سے متعلق قانون کے تحت متاثرہ خاتون کی مدعیت میں مقدمہ درج کرکے ریتا سرکار کے شوہر اور دیور کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

Source Link