جودھ پور: بھارتی عدالت نے ہرن کیس میں سلمان خان کو مجرم قرار دے دیا۔ سیف علی، تبو، سونالی، نیلم کو کیس میں بری کر دیا گیا۔ بھارتی عدالت نے سلمان خان پر فرد جرم عائد کر دی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق سلمان خان کے خلاف کالے ہرن شکار کے کیس کا فیصلہ جودھ پور کی عدالت میں سنادیا گیا۔ فیصلے میں سلمان خان کو مجرم قرار دے دیا گیا جبکہ مقدمے میں شامل دیگر ملزمان اداکار سیف علی خان ، سونالی باندرے، نیلم اور تبو کو بری کر دیا گیا ہے۔

اداکار سلمان خان پر الزام ہے کہ انہوں نے 19 سال قبل 1998 میں راجستھان کی ریاست جودھ پور میں فلم’’ہم ساتھ ساتھ ہیں‘‘کی شوٹنگ کے دوران اجازت نہ ہونے کے باوجود نایاب کالے ہرنوں کا شکار کیا تھا۔ سلمان خان کے ساتھ اس مقدمے میں اداکارہ سونالی باندرے ، تبو ، نیلم اور اداکار سیف علی خان بھی نامزد تھیں۔

کیس کی گزشتہ سماعت 30 مارچ کو ہوئی تھی جس میں جودھ پور عدالت کے جج مجسٹریٹ دیو کمار کھتری نے فیصلہ محفوظ کرتے ہوئے کہا تھا کہ کیس کا فیصلہ 5 اپریل کو سنایا جائے گا اس موقع پر انہوں نے سلمان خان سمیت مقدمے میں شامل دیگر ملزمان کو عدالت میں پیش ہونے کا حکم دیا تھا۔

عدالت کے حکم کے مطابق سلمان خان اپنے اہل خانہ کے ہمراہ جودھ پور پہنچے جبکہ مقدمے میں شامل دیگر اداکار گزشتہ روز ہی جودھ پور پہنچ گئے تھے۔ اس موقع پر عدالت کے باہر سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں اور بڑی تعداد میں پولیس اہلکار تعینات کئے گئے