حکومت نے ایم کیو ایم کے تحفظات دور کرنے کا فیصلہ کرلیا, وزیراعظم نے کراچی بحالی ٹاسک سونپ دیا، جہانگیرترین کی سربراہی میں پی ٹی آئی کا وفد بھی ایم کیو ایم قیادت سے ملاقات کرے گا۔

وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت کابینہ کا اجلاس ہواجس میں بلاول بھٹوکی ایم کیوایم کوپیشکش کامعاملہ زیربحث آیا, حکومت نےاتحادی جماعت ایم کیوایم کےتحفظات دور کرنےکافیصلہ کرلیا ہے, وزیراعظم نےاس حوالے سےکراچی بحالی کمیٹی کوٹاسک سونپ دیا, گورنرسندھ عمران اسماعیل نےکراچی بحالی کمیٹی کااجلاس بھی طلب کرلیا۔

وزیراعظم عمران خان نےاس سیاسی ہلچل کوخودہینڈل کرنےکافیصلہ کیاہے, وزیراعظم کی ہدایت پرجہانگیرترین کی سربراہی میں پی ٹی آئی کاایک وفدرواں ہفتےایم کیوایم قیادت سےملاقات کرےگا،ملاقات میں ایم کیوایم کوفنڈزکےاجراء، بلدیاتی اختیارات کی واپسی، گمشدہ واسیرکارکنان اورپارٹی آفس کھولنےکےمعاملےپرتحفظات دورکرنےکی یقین دہانی کرائی جائےگی

ذرائع کےمطابق اتحادیوں کےدرمیان ورکنگ ریلیشن شپ اورتحریری معاہدےپربھی غورہوگا،دوسری طرف بلاول بھٹوکی پیشکش پرایم کیوایم کی جانب سےکہاگیاہےکہ اگرسندھ میں ان کی مرضی کابلدیاتی نظام لایاجائےتووہ سندھ حکومت کاساتھ دینےکوتیار ہیں، لیکن وفاقی حکومت کا ساتھ چھوڑنےکوتیارنہیں۔

ایم کیو ایم قیادت کی جانب سےکہاگیاہےکہ حکومت کوفی الحال موقع دےرہے ہیں، لیکن ابھی تک وفاقی حکومت نےمایوس ہی کیا ہے،گزشتہ روزچیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹونےایم کیوایم کوآفر کی تھی کہ ان کےپاس جتنی وزارتیں وفاق میں ہیں اتنی ہی سندھ میں لےلیں اوروفاقی حکومت کوچھوڑکرسندھ حکومت کاساتھ دیں۔

24 News HD