اپوزیشن کا قبلہ درست نہیں، قومی اسمبلی ہال میں غلط رخ میں نماز پڑھنا اپوزیشن کو مہنگا پڑگیا۔

قومی اسمبلی میں پہلی مرتبہ اپوزیشن کا قبلہ درست کرانے کی قرار داد جمع کرادی گئی ، 6 مارچ کو تاریخ میں پہلی مرتبہ ایوان میں نماز مغرب کی باجماعت ادائیگی کا احتجاج کا یہ انداز حزب اختلاف کے اپنے ہی گلے پڑ گیا ۔

تحریک انصاف کے علی محمد خان اور ابراہیم خان کی جانب سے جمع کرائی گئی قرار داد میں کہا گیا کہ جے یو آئی ف کے پارلیمانی لیڈر اسد محمود کی امامت میں نماز غلط رخ میں ادا کی گئی ۔

تاریخ میں پہلی بار قومی اسمبلی میں نماز کی ادائیگی، ویڈیو

قراداد کے مطابق بتانے کی باوجود ارکان نے قبلہ رخ اختیار نہیں کیا احکامات الہٰی اور سنت محمدی کی خلاف ورزی قابل مذمت قرار دی جائے ۔

قرارداد میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ پارلیمان میں نماز کی باجماعت ادائیگی کیلئے مسجد موجود ہے، ایسے میں اپوزیشن ارکان نے غلط رخ میں اور نامناسب جگہ پر نماز ادا کرکے مسلمانوں کے دینی جذبات مجروح کیے ہیں ۔